Ministry of Planning
Development & Special Initiatives
Public Awareness Campaign ON Corruption: "United Against Corruption for a Prosperous Pakistan....."

Press Release

وفاقی وزیر منصوبہ بندی احسن...

Published : 12 August 2022

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ترقی اور ...


وفاقی وزیر منصوبہ بندی پروف...

Published : 12 August 2022

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اور خصوصی...


Lack of integrated energy planning in the previous...

Published : 5 August 2022

Federal Minister for Planning Development & Special Initiatives Profes...


وزارت منصوبہ بندی کی ترقی ا...

Published : 3 August 2022

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ترقی اور ...


وزارت منصوبہ بندی کی ترقی اور خصوصی اقدامات کی وزارت وفاقی وزیر منصوبہ بندی کی چین کے ساتھ درآمدی حجم کو بڑھانے کی ہدایت

Dated : 3 August 2022

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ترقی اور خصوصی اقدامات پروفیسر احسن اقبال نے عالمی رجحان کو مدنظر رکھتے ہوئے متعلقہ حکام کو ہدایت جاری کی ہیں کہ وہ مارکیٹ ڈریون اپروچ اپناتے ہوئے چین کی مارکیٹ کی نشاندہی کریں جہاں پاکستان اپنی مصنوعات کو استعمال کر سکے.

یہ ہدایات وفاقی وزیر نے ایک خصوصی اجلاس کی صدرات کرتے ہوئے جاری کیں, اس حوالے سے وفاقی وزیر کو تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی جس پہ وفاقی وزیر نے متعلقہ حکام کو درآمدات کا حجم بڑھانے کی ہدایت جاری کیں.

وزیر نے متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کو چین کے ساتھ برآمدات کو 3 بلین ڈالر کی موجودہ تجارت سے بڑھا کر 30-40 بلین ڈالر کرنے کی ہدایت کی.

انکا کہنا تھا کہ چین کی پاکستان کے ساتھ تجارتی درآمدات کا حجم 2600 بلین ڈالر ہے جو پاکستان کی چین کے ساتھ برآمدات سے انتہائی کم ہے,
انہوں نے مزید کہا کہ وزارت تجارت کو دوسرے محکموں کے ساتھ مل کر چین کے ساتھ تجارت بڑھانے کے حوالے سے حکمت عملی وضع کرنی چاہیے.


وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ چینی منڈیوں میں پوٹینشل کو مارکیٹ میں مرحلہ وار کر کے استعمال کیا جا سکتا ہے جہاں پاکستان کو تقابلی فائدہ حاصل ہے اور اس سلسلے میں عالمی رجحانات اور تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے مارکیٹ پر مبنی نقطہ نظر کو عملی جامہ پہنایا جانا چاہیے.
دریں اثنا، وزیر نے پبلک سیکٹر ڈویلپمنٹ پروگرام (PSDP) کے تحت منصوبہ بندی کی ترقی اور خصوصی اقدامات کی وزارت کے منصوبوں کا بھی جائزہ لیا۔

وفاقی وزیر نے متعلقہ حکام کو. ہدایت دی کہ وہ ان منصوبوں کی تکمیل میں تمام رکاوٹوں کو دور کریں جس میں سینٹر آف ایکسیلنس فار چائنا اکنامک کوریڈور سپورٹ پروجیکٹ، پالیسی اورینٹڈ ریسرچ کے لیے مسابقتی گرانٹس، گرین لائن ریپڈ ٹرانزٹ سسٹم، نیوٹریشن پر ایس ڈی جیز کے لیے نیشنل انیشیٹو، گرین لائن کا آپریشنلائزیشن شامل ہیں۔ بی آر ٹی ایس اور انٹیگریٹڈ انٹیلیجنٹ ٹرانسپورٹ سسٹم کے آلات کی تنصیب شامل ہیں.