Public Awareness Campaign ON Corruption: "United Against Corruption for a Prosperous Pakistan....."

Press Release

Meeting of the Central Development Working Party c...

Published : 16 July 2018

Senior officials of the federal / provincial governments represented t...


CPEC has made substantive progress in last 05 year...

Published : 11 July 2018

اسلام آباد ( ) وفاقی وزیر برائے منصوبہ ...


وزارت منصوبہ بندی کے زیر اہ...

Published : 11 July 2018

اس کانفرنس کی مہمان خصوصی نگران وفاقی ...


Important Points highlighted by the Minister for P...

Published : 11 July 2018

The minister for Planning while talking on the occasion commended Mini...


CPEC has made substantive progress in last 05 years: Dr. Shamshad

Dated : 11 July 2018


اسلام آباد ( ) وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ترقی و اصلاحات ڈاکٹر شمشاد اختر نے کہاہے کہ چین پاکستان اقتصادی راہدا ری منصوبے کے تحت28.6ارب ڈالر کے 22منصوبے عملد ر آمد کے مرحلے میں ہیں ، سی پیک کے تحت گوادر پورٹ ، گوادر سٹی اور کوسٹل لائن کو ترقی دی جا رہی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ رو ز سی پیک کے 55ویں جائزہ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کر تے ہوئے کیا ، وفاقی وزیر منصوبہ بندی ڈاکٹر شمشاد نے کہاہے کہ سی پیک کے تحت ویسٹرن ، ایسٹرن اور سینٹرل الائمنٹ پر کام ہو رہا ہے ، اجلاس کا مقصد منصوبوں کے تسلسل کو جا ری رکھنے کے لیے بلایا گیا تھا ، انہوں نےکہاکہ سی پیک کے تحت ایم ایل ون منصوبے کو عملی بنانے کیلئے کا کام جاری ہے، ایم ایل ون 8.2ارب ڈالر کا منصوبہ ہے پاکستان میں انڈ سٹریل زون کی ڈویلپمنٹ بہت اہمیت کا حامل ہے ، جس پر کام مزید تیز کرنے کی ضرورت ہے ، پہلے پاکستان کی تاریخ انڈسٹریل زون کے حوالے سے کامیا ب نہیں رہی ، اس لیے سرمایہ کا ری بورڈ کے ساتھ مل کر انڈ سٹریل زون کی تعمیر کے لیے جامع حکمت عملی تشکیل دی جارہی ہے تاکہ انڈ سٹریل زون کو کامیا ب کرنے کے لیے بہترین لائحہ عمل تشکیل دیا جا سکے ، وفاقی وزیر نے کہاکہ چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کے تحت گوادر انٹرنیشنل ائیر پورٹ انتہائی اہمیت کا حامل ہے اس پر جلد کام شروع کیا جا ئے گا ۔اس موقع پر سیکرٹری منصوبہ بندی ترقی و اصلاحات شعیب احمد صدیقی نے کہاکہ سی پیک کے ابتدائی منصوبوں میں توانائی سیکٹر پر فوکس کیا گیا ، بلو چستان کے منصوبوں کے لیے پی ایس ڈی پی اور چائنیز انوسمنٹ سے بھی منصوبے شروع کیے ،