Public Awareness Campaign ON Corruption: "United Against Corruption for a Prosperous Pakistan....."

Press Release/Tickers

پاکستان کو اس وقت معاشی لان...

Published : 20 March 2024

وفاقی وزیر منصوبہ بندی پروفیسراحسن اق...


The CDWP meeting presided over by Deputy Chairman ...

Published : 15 March 2024

The CDWP meeting presided over by Deputy Chairman Planning Commission ...


وزارت منصوبہ بندی کا 5 ایز ف...

Published : 14 March 2024

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ترقی و خص...


Ahsan Iqbal reviews progress of National Centers o...

Published : 13 March 2024

The newly-appointed Federal Minister for Planning Development & Specia...


ملکی موجودہ اور مستقبل کے چیلنجز کا مقابلہ کرنے کیلئے منصوبہ بندی کمیشن کی استعداد میں بہتری لانے کا فیصلہ

Dated : 13 March 2024

موجودہ اور مستقبل کے چیلنجز کا مقابلہ کرنے کیلئے منصوبہ بندی کمیشن کی استعداد کار میں بہتری لانے کا فیصلہ، فیصلے کی رو سے نجی شعبے، تحقیق، شعبہ جات کے ماہرین، صنعت کے ساتھ اشتراک عمل کے نتیجے میں اعلیٰ سطحی پالیسی بورڈ تشکیل دیا جائے گا، منصوبہ بندی کمیشن میں نجی شعبے، اکیڈیمیا اور صنعت کے شعبوں سے قابل افراد لائے جائینگے،اعلامیہ وزارت منصوبہ بندی۔

اس بات کا فیصلہ بدھ کو وفاقی وزیر منصوبہ بندی کی زیرصدارت منصوبہ بندی کمیشن اصلاحات کا جائزہ لینے کیلئے ایک اعلی اجلاس منعقد ہوا جسمیں سیکریٹری وزارت منصوبہ بندی اویس منظور سمرا، ممبرز پلاننگ کمیشن اور دیگر اعلی حکام نے شرکت کی سیکریٹری وزارت منصوبہ بندی نے منصوبہ بندی کمیشن اصلاحات پر شرکاء کو ایک جامع بریفنگ دی۔

اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے متعلقہ حکام کو ہدایت جاری کیں کہ پلاننگ کمیشن میں باصلاحیت افراد کو لانے کے لئے مروجہ طریقہ کار کی پیچیدگیاں ختم کرکے نیا اور بہتر میکنزم تشکیل دیا جائے جبکہ وزرت منصوبہ بندی اور منصوبہ بندی کمیشن میں افسران کی استعداد کار میں بہتری لانے کے لئے حکمت عملی وضع کی جا سکے۔

سیکریٹری منصوبہ بندی و ممبران پلاننگ کمیشن اس پالیسی بورڈ کے تنظیمی ڈھانچے، دائرہ کار کی تفصیلات طئے کر کے جلد از جلد سفارشات پیش کریں، احسن


انہوں نے مزید ہدایت جاری کیں کہ صوبوں اور دیگر وزارتوں سےترقیاتی منصوبوں کے پی سی ون کے جائزہ کے لئے ماہرین کی شراکت کا دائرہ بڑھانے کے لئے میکنزم طے کیا جائے۔

وفاقی وزیر منصوبہ بندی کا کہنا تھا کہ وزیراعظم شہباز شریف کا وژن ہے کہ قومی اداروں میں بہترین دماغوں اور باصلاحیت افراد کو لا کر ملکی اداروں کی استعداد کار میں بہتری لائی جا سکے۔

احسن اقبال کا متعلقہ حکام کو مزید ہدایات جاری کیں کہ موجودہ اور مستقبل کے چیلنجز سے نبرد آزما ہونے کے لئے نجی شعبے، اوورسیز، اکیڈیمیا اور انڈسٹری سے پروفیشنلز اور ماہرین کو سرکاری شعبے میں لانے کے لئے حکمت عملی وضع کی جائے جبکہ انکا کہنا تھا کہ وقت کم ہے اور چیلنجز بے شمار، ہمیں نظام کی پیچیدگیاں بدل کر اپنے ڈھانچے کو فعال بنانے کی ضرورت ہے، اس حوالے سے سفارشات مرتب کر کے جلد پیش کی جائیں۔

مزید برآں، انہوں ہدایت جاری کیں کہ پلاننگ کمیشن میں موجود افراد کار، ماہرین اور افسران کی کارکردگی جانچنے کے لئے ٹھوس پیمانے (کے پی آئیز) وضع کر کے پیش کئے جائیں، جبکہ تمام ممبران اور کمیشن میں موجود ماہرین کی کارکردگی رپورٹ سہ ماہی بنیادوں پر مرتب کی جائے۔

مزید برآں، انکا کہنا تھا کہ پلاننگ کمیشن کو تمام اداروں کے لئے رول ماڈل کا کردار ادا کرنا ہے، اس کے لئے مثالی کارکردگی دکھانا ضروری ہے جبکہ بہترین صلاحیتوں اور تجربہ کے حامل افراد کی ترقیاتی عمل کی منصوبہ بندی میں شراکت ناگزیر ہے۔

اجلاس میں سرکاری و نجی شعبے، اکیڈیمیما، انڈسٹری کی شراکت سے مختلف شعبوں سے ماہرین اور تجربہ کار افراد پر مشتمل اعلیٰ سطحی پالیسی بورڈ تشکیل دینے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔